ظلمت کدے کے سارے خداؤں کے فیصلے
مل کر بدل سکے نہ دعاؤں کے فیصلےاندھی ہوا کے پاس رکابِ سفر تھی لیک
بچوں کے ہم سفر رہے ماؤں کے فیصلےوہ کون لوگ تھے کہ جو دستار لے گئے؟
یہ کون کر رہے ہیں رداؤں کے فیصلے؟پلکوں سے تیرا عکس سنبھالا نہیں گیا
دل میں اتر گئے ہیں خزاؤں کے فیصلےوہ شمعِ خواب خواب تو کب کی بجھی بلالؔ
وہ جس نے رد کئے تھے ہواؤں کے فیصلے

محمد بلال اعظم

Share: