اُس کے ہاتھوں میں بھی تیشہ نہ رہا میرے بعد
کتنا خالی ہے کفِ دستِ حنا میرے بعدمیں فقیرانہ روش رکھتا تھا، سو چھوڑ دیا
اب اکیلا ہے محبت کا خدا میرے بعداتنا انجان نہ بن، صاف بتا دے مجھ کو
کس نے بخشی ترے ہاتھوں کو حنا میرے بعد؟نم گرفتہ ہیں مری آنکھیں، عجب سوچ میں ہوں
کسے روئے گا سدا دشتِ بلا میرے بعد؟کتنا بے صرفہ گیا گھر کا اجڑنا جاناں
وہ جو چاہت کا دیا تھا، وہ بجھا میرے بعددیکھنا! صحنِ چمن میں بھی خزاں چھائے گی
دیکھو! اس طرح سے آئے گی قضا میرے بعد

محمد بلال اعظم

Share: