ہست اور نیست کی دنیا کا نشاں تجھ(ﷺ) سے ہے
یہ زماں تیرے(ﷺ) لئے اور مکاں تجھ(ﷺ) سے ہے
 
سرورِ سروراں(ﷺ) یہ روحِ رواں تجھ(ﷺ) سے ہے
اور ہر ایک گھڑی فیض رساں تجھ(ﷺ) سے ہے
 
تیرے(ﷺ) ہونے سے ہے دامانِ بیاباں میں سحر
اور یہ انجمنِ ہفت جہاں تجھ(ﷺ) سے ہے
 
دمِ حسنِ لبِ کُن، شعلگیِ شمعِ حرم
وہاں تیرے(ﷺ) لئے تھی، یہاں تجھ(ﷺ) سے ہے
 
ایک ہی خواب کہ طیبہ میں گزاروں میں حیات
اور اس خوابِ مسلسل میں بھی جاں تجھ(ﷺ) سے ہے
 
یہ زماں دولتِ دارین کا صدقہ ہے بلالؔ
اور عالم کا مقدر بھی عیاں تجھ(ﷺ) سے ہے

محمد بلال اعظم

Share: